24

کراچی میں ڈی آٸ جی پی ویسٹ زون میں کرونا واٸرس کی حفاظتی اقدامات کےلیے اجلاس

کراچی: (محمد اعظم) ڈی آئی جی پی ویسٹ زون آفس میں کرونا وائرس سے بچاؤ کے حفاظتی اقدامات کے حوالے سے اہم اجلاس
امروز ڈی آئی جی آفس ویسٹ زون کراچی میں کرونا وائرس حفاظتی اقدامات اور ماہ رجب وشعبان میں ہونے والی مجالس واجتماع کے حوالے سے ڈی آئی جی پی ویسٹ زون ڈاکٹر امین یوسفزئی صاحب کی زیر صدارت ایک اہم اجلاس ہوا جسمیں
ایس ایس پی سینٹرل عارف اسلم راؤ صاحب۔
ایس ایس پی ویسٹ فداحسین جانوری صاحب۔
ڈپٹی کمشنرضلع سینٹرل۔
ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ضلع ویسٹ۔
ایس پی ھیڈ کوارٹر ویسٹ زون۔
ڈی ایس پی آپریشن ویسٹ زون ناصر بخاری۔زونل انٹیلجنس انچارج ویسٹ زون جاوید یوسفزئی اوردیگر افسران کے علاوہ اہل تشعہ ویسٹ زون کی امام بارگاہوں کے منتظمین شبر زیدی۔مظہر اقبال۔سید رضی حیدر۔ عارف نقوی کی قیادت میں ایک وفد نے شرکت کی۔ اس موقع پر ڈی آئی جی ویسٹ زون ڈاکٹر امین یوسفزئی صاحب نے فرمایا کہ اس وقت ملک خاص کر سندھ میں کرونا وائرس سے متاثر ہونے والے افراد کی تعداد میں بتدریج اضافہ ہورہا ہے اور اس سے بچاؤ کے لیئے حکومتِ سندھ نے بڑے جامع اقدامات کئے ہیں جن میں اہم تعلیمی اداروں کی بندش۔عوام کے اجتماعات (مذہبی۔ سیاسی- تفریح) پر پابندی عائد کردی گئی ہے تاکہ اس وبائی بیماری سے نبٹا جاسکے۔ اسکے علاوہ اس وائرس سے بچنے کے لیئے ھدایات جاری کی ہیں۔ جن میں اول اپنے ہاتھوں کو بار بار صابن سے دھونا۔حفاظتی ماسک کا استعمال اور غیر ضروری جگہوں پر جانے سے پرہیز اور دیگر احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی بابت کہا ہے۔ لہذا ان تدابیر پر عمل کرکے اس موذی وائرس سے بچا جاسکتا ہے۔

ڈی آئی جی صاحب نے اہلِ تشعہ وفد کے اراکین کو حکومتی ھدایات سے آگاہ کیا اور فرمایا کہ ماہ رجب اور شعبان میں ہونے والی مجالس اور جلوس کو محدود رکھا جائے تاکہ کرونا وائرس کے خطرے سے بچا جاسکے۔ ڈی سی سینٹرل نے فرمایا کہ حکومت نے تمام اقسام کی اجتماعات پر پابندی لگا دی ہے اور اس سلسلے میں جو اجازت نامے جاری ہوئے تھے انھیں منسوخ کردیا گیا ہے۔ لہذا حکومت کی ھدایات پر عمل کیا جارہا اور کسی بھی قسم کے عوامی اجتماع کی اجازت نہیں ہے۔ اس موقع پی ایس ایس پی اضلاع سینٹرل و ویسٹ نے بھی ضلعی پولیس کی جانب سے کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیئے کئے گئے اقدمات اور پولیس کی کارکردگی سے آگاہ کیا۔ آخر میں اللّہ تعالٰی سے ملک وقوم کی سلامتی اور موذی بیماری سے بچاؤ کے لیئے خصوصی دعا کی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں