23

حکومت کرونا وائرس سے انتقال ہونے والے صحافیوں کیلئے فوری امدادی فنڈ مختص کرے۔چیف اکرام الدین

صحافیوں نے ملک و قوم اور عوام کی خدمت کیلئے اپنی جانوں کے نظرنے پیش کئیے۔بانی و مرکزی صدر جزبہ اتحاد یونین آف جرنلسٹ یورپ آرگنائزیشن

جرمن(انٹرنیشنل ڈسک) جزبہ اتحاد یونین آف جرنلسٹ یورپ آرگنائزیشن کے بانی وصدر اکرام الدین نے کہا کہ حکومت کرونا وائرس سے انتقال ہونے والے صحافیوں کیلئے فوری امدادی فنڈ مختص کرے جس طرح وزیر اعظم کی طرف سے عریب عوام کیلئے احساس فنڈز کا اجرا کیا گیا تھا اس طرح صحافیوں کیلئے امدادی فنڈ مختص کرنے میں کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے صحافیوں نے ملک و قوم اور عوام کی خدمت کیلئے اپنے جانوں کے نظرانے پیش کیئے جو ملک و قوم کیلئے باعث فخر ہے کرونا وائرس عالمی وبا کے موقع پر جس طرح پولیس، افواج، اور ڈاکٹرز نے خدمات سرانجاد دیئے اس سے بڑھ کر صحافیوں نے اہم رول و کرداد ادا کیا ہے صحافیوں کی عظمت و بہادری کو سلام پیش کرتے ہیں کرونا وائرس جیسی عالمی وبا کے موقع پر صحافیوں نے جو ملکی حالات سے ہم سب کو با خبر رکھنے کیلئے جو محنت و جدوجہد کی ہے اسے ہمیشہ یاد رکھا جائے گا کیونکہ صحافی ریاست کا چھوتا ستون ہوتا ہے صحافیوں نے ہمیشہ اور ہر قسم حالات میں ملک و قوم اور عوام کا بھرپور ساتھ دیا ہے دنیا بھر میں جتنے صحافی کرونا وائرس کی شکار ہوئے ہے اللہ تبارک و تعالی ان سب صحافیوں کو صحت کاملہ نصیب فرمائے اور دنیا بھر میں جتنے صحافی حضرات کرونا وائرس کی وجہ سے انتقال کر گئے ہیں اللہ ان سب کی مغفرت فرمائے انہوں نے کہا کہ صحافیوں پر جاری تشدد کے واقعات کی مذمت کرتے ہیں صحافیوں پر تشدد میں ملوث افراد کو سخت سزا دی جائے صحافی برادری تشدد کی نہیں عزت و احترام کی حقدار ہے صحافیوں کا عزت و احترام کرنا ہر سیاستدان اور ہر ادارے کے افسران کی اہم ذمہ داری ہے جزبہ اتحاد یونین آف جرنلسٹ یورپ آرگنائزیشن کے بانی وصدر اکرام الدین نے اقوام متحدہ اور یونائیٹڈ نیشن سے مطالبہ کیا کہ دنیا بھر میں صحافیوں پر جاری مظالم و تشدد کے خلاف فلفور ایکشن لیا جائے اور دنیا بھر کے صحافیوں کو درپیش مسائل و مشکلات کے حل اور تحفظ میں بھی اہم کردار ادا کریں تا کہ صحافیوں کو درپیش مسائل و مشکلات سے نجات مل سکے انہوں نے مزید کہا کہ اقوام متحدہ اور دنیا بھر کے تمام ممالک کے سربراہان سے مطالبہ ہے کہ کرونا وائرس جیسی عالمی وبا کا شکار اور کرونا وائرس سے انتقال ہونے والے صحافیوں کو مالی امداد کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے کیونکہ کرونا وائرس جیسی عالمی وبا کے موقع پر صحافیوں نے جو خدمات سرانجام دیے وہ دنیا کے تمام ممالک کے عوام ہمیشہ یاد رکھینگے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں